ہاٹ سیکس سٹوری گرم بیوی اور لونڈے باز شوہر

(hot sex story garm bevi aur londe baaz sohar)

hot sex story jab sohar ko choot nahi gaand ki zaroorat ho

گرم بیوی  یہ  میرے دوست کی بیوی ہے اس کا کام ہی چدائی لگوانا ہوتا ہے اس کے گھر ا سکے شوہر کا جو بھی دوست آیا ا سنے اسی سے چدائی لگوائی اس کی اندرونی بھی کہانی ہے

جس کا کسی کو معلوم نہٰں ہے میں نے بھی یہ سمجھا تھا کہ میرے دوست کی بیوی چالو عورت ہے جو طرح طرح کے بندوں سے چدائی لگوا لیتی ہے پھر جب میری ا سکے ساتھ دوستی ہوئی

تو مٰں نے چودنے کے بعد پوچھا تھا کہ  سچ بتاو کہ تم ہر اس بندے سے چدا لیتی ہو جو بھی تمہارے شوہر کا دوست گھر آجاتا ہے ا سکی کیا وجہ ہے

تب اس گرم بیوی نے مجھے انتہائی دکھ کے ساتھ بتایا تھا کہ اس کے مرد کو مردوں سے ہی سکون ملتا ہے ا سکا شوہر لونڈے باز ہے اور ا سبات کا سوائے ا سکے کسی کو معلم نہیں ہے

اس کا باس بھی گانڈ مراتا ہے اور یہ ا سکو چودنے اس کے گھر جاتا ہے اسی لہیئے میرے شوہر کے باس نے ہم کو اچھا گھر مفت رہنے کو دیا ہوا ہے میرا شوہر اس کو چودتا بھی ہے

اور چدائی لگواتا بھی ہے ا سنے مجھے کہا کہ کیا میں تیری گانڈ لے سکتا ہوں تو میں نے روک دیااور اس کو میری چوت سے بالکل غرض نہٰں ہے جو لے یا نا لے اس کو مجھ میں  اب دلچسپی نہیں ہے تومیں  کیا کرو میں چپ ہو گیا کہ اپنے دوست بارے یہ پہلی بار مجھے معلوم ہوا تھا

میرا نام ریاض ہاشمی ہے اور یہ ایک سچی پاکستانی سیکس کہانی اپنے دوست کی وائف کے ساتھ پاکستانی سیکس کیا  جس کو آپ پڑھ رہے ہیں اس میں  جھوٹ نہیں ہے تو شروع کرت

ا اگلی جانب ایک بار کا میرے دوست کی وائف جسکا نام تھا مہک  ہےوہ بہت خوبصورت اور سیکسی بھی  تھی میرے دوست کا نام تھا نوید ہم دونو ں بہت اچھے دوست تھے کبھی وہ ہمارے آجاتا تھا

تو کبھی میں اسکے گھر چلا جاتا تھا اسکی وائف بھی مجھے جانتی تھی ایک دن کیا ہوا میں نوید  کے گھر گیا اسے ملنے کے لئے رات کا وقت تھا نو بجے ہونگے

میں نوید کے گھر پہنچابیل بجائی تو اسکی وائف نے دروازہ کھولا یار کیا بتاؤ کیا لگ رہی تھی وہ اسنے بلیک کلر کی شلوار قمیض پہنی ہوئی تھی وہ بھی فٹنگ میں میں تو اسے دیکھتا ہی رہ گیا

اسکے بوبس تو اسکی قمیض سے باہر نکلنے کو بیتاب تھے  ہم کئی دنوں سے دبے دبے ایک دوسرے مٰں دلچسپی لے رہے تھے اور کھل کے کچھ کرنا چاہتے تھے لیکن پہل کون کرے والال معاملہ تھا

اسنے مجھے اندر آنے کو کہا میں جاکر صوفے پر بیٹھا میرے خیال سے وہ گھر پر اکیلی تھی میں نے پھر بھی اسے پوچھ ہی لیا میں نے کہا کے نوید گھر پر ہے وہ بولی کے نہیں وہ تو اپنے باس کے گھر گئے ہے

انکے با سنے انہیں اپنے کسی خاص کام کے لیئے بلایا ہے وہ بعد مٰں علم ہوا تھا کہ خاص کام چدائی ہوتی تھی  یہ سن کر میرے دل میں خوشی ہونے لگی

میں نے کہا کے چلو ٹھیک ہے میں پھر چلتا ہوں میں نے جان بوجھ کے کہا کہ وہ کیا کہتی ہے  وہ بولی کے بیٹھ جائے میں چائے بنا رہی ہوں پی کر جائے گا

 ایسے نہیں  جانے دونگی وہ کچن کی طرف جانے لگی یار کیا بتاؤ اسکی گانڈ پیچھے سے کیا لگ رہی تھی میری نیت خراب ہونی شروع ہوگی تھی دل کر رہا تھا

کے پیچھے سے جاکر پکڑلو ں پر میں ڈر بھی رہا تھا کے اگر وہ برا ماں گئی تو میں نے سوچا کوشش کرنے میں کیا حرج ہے چلو کچھ نہیں  ہوتا دل بڑا کیا

میں جلدی سے اٹھا اور اسکے پیچھے جاکر کھڑا ہوگیا میں نے اسے پیچھے سے کس کر پکڑ لیا اپنے لنڈ کو اسکی گانڈ کے ساتھ لگا کر اسے اندر بھر کرنے لگا

اور اپر سے دونوں  ہاتھو ں سے اسکے زبردست دودھ کو دبانا شروع کیا میرا جوان سکسی لنڈ کھڑا ہوگیا تھا وہ خود کو مجھ سے بناوٹی طور پہ ے دور کرنے کی کوشش کرنے لگی

اور کہنے لگی کے چھوڑئیے مجھے یے غلط کر رہے ہے آپ میں آپکے دوست کی وائف ہو میں نے اسکی ایک نہ سنی اور زور سے اسکو پکڑ کر اسکی جوانی  کے بوبز کو دبانے لگا

اب اسکی پاکستانی سیکس میں آواز میں تبدیلی انے لگی تھی وہ اس طرح ایک دم سسکیاں لش والی لینے لگی تھی میں نے قت کی پروا کیئے با اسکو اپنی گود میں  اٹھایا اور اسے نیچے لٹا کر اسکے اوپر لیٹ کر اسکے ہونٹ چومنے لگا

اسکو زبردست کسنگ کرنے کے ساتھ اسکی جوانی کو فل مست چودنے کے لییے اسکو تیار کر دیا تھا اور پھر میں نے اس دوست کی گرم  بیوی کو پکڑ کر اسکی جوانی کیقمیض پاکستانی سیکس کرنے کے لیئے اندر ہاتھ ڈالا

اور اسکے ساتھ اسکے نپلز کو مسلتا ہوا اسکو فل گرم سکس کرنے لگا اور اب وہ  بھی میرا ساتھ دے رہی تھی میں نے اب اسکی جوانی کو چودنے کے لیئے اسکے جسم کا فل مست مزہ گرم انداز میں لینا شروع کیا

اور اسکی شلار کو اوپر کرکے تھوڑی گانڈ ننگھی کی اسکی اور پھر اپنا لنڈ نکال کر اسکی چوت پر رکھ کر گھسانے لگا

اسکے اندر وہ میری بانہوں میں نڈھال تھی اور میں  اسکی جوانی کو نان سٹاپ چود رہا تاھ اسکی پھدی بہت ٹائٹ تھی شاید دوست کا لنڈ چھوٹا ہو گا اسکی پاکستانی سیکس والی سسکیاں نکلنے لگیں

مگر میں نہ رکا اور دس منٹ کے اندر اسکی چوت کا پانی نکالنے کے ساتھ اسکے اندر فارغ ہو گیا تھااور ہم ایک دوسرے کے ساتھ لپٹ کے پڑے رہے تب ہی ا سنے مجھے اپنے لونڈے باز شوہر والی بات بتائی تھی

اور اب مجھے اپنے دوست کی گرم بیوی کے ساتھ ہمدردی بھی اور محبت بھی ہو گئی ہے میں اس کو دسمبر کی راتوں میں  کوبگرماتا ہوں بے چاری اگر میں  نا ہوتا تو ٹھنڈ میں مر ہی گئی ہوتی

Hot sex story me husband aur wife ki problem

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top