ہاٹ سٹوری میں دوست کی بہن سے رومانس

(hot story mae dost ke bahan sae romance)

hot story muj ko chodna tha ab dost ki bahan hoo mae kia kar sakta hoon

ہاٹ سٹوری  شیئر کرنے سےپہلےبتا دوں ان دنوں میرا دل ٹوٹا ہوا تھا کسی کام میں دل نہیں  لگ رہا تھا میرا تازہ تازہ بریک اپ ہوا تھا جس کلاس فیلو کے ساتھ میرا رومانس چل رہا تھا اس کی خاندان  میں کسی مجبوری کی بنا پہ شادی ہو گئی تھی میں نے اس دوست لڑکی سے کہا تھا کہ اگر مجھ سے محبت کرتی ہے تو اپنے گھر والوں سے کہے شائد وہ مان جائیں لیکن اس کا اپنا بھی شائد موڈ نہیں تھا جو اس نے میری بات نہیں مانی تھی

ایک دن مجھے ا سکی بہن کی کال آئی شائد وہ مجھ میں دلچسپی لینے لگی تھی میں نے ہیلو کیا تو بولی کیا ہوا جو میری آپی سے آپکا بریک اپ ہو گیا ہے کیا مجھ سے دوستی کرو گے میں بھی اکیلی ہوں اور آپ کا مجھے علم کہ اچھے لڑے ہو کبھی آپ نے  آپی کو بلیک میل نہیں کیا تھا  مجھے اس کی باتوں سے سکون ملا تھا اور میں چونکہ چوٹ کھایا ہوا تھااور مجھے بھی اندازہ تھا کہ یہ لڑکی اچھی ے اس کا کسی کے ساتھ افیئر نہٰں ہے میں جب بھی ان کے گھر کسی بہانے سے جایا کرتا تھا

یہ مجھے چائے یا کبھی کولڈ ڈرنکس سروس دیتی تھی تو پیار سے دیکھتی تھی لیکن اس کو علم تھا کہ میں اس کی آپی سے منسلک ہوں تو ا سلیئے اس نے مزید بات چیت کبھی نہیں بڑھائی تھی اب ا سکو معلوم تھا کہ میں اکیلا رہ گیا ہوں اور  اس کی بچپن کی دوستی والی خواہش اندر سے جاگ گئی تھی جس کی بنا پہ وہ مجھے  سیکس کے لیئے تو خیر میں ابھی کچھ نہیں کہہ سکتا تھا دوستی کے قابل ضرور سمجھ رہی تھی  میں نے اس کا تصور کیا اس کے ممے بھی بڑے تھے بڑے ممے مجھے پسند ہیں

اور ا سکی ناک اور گال بھی اپنی آپی سے کافی حد تک ملتے تھے جس کی بنا پہ مجھے بھی اچھی لگنے لگی تھی میں اس کو اس کی آپی کا متبادل سجھ کے دوستی کرنے لگا تھا اور میں نے اسکو کھانے  پر بلایا پھر اسکو باغ   میں  لے گیا اور  پرپوز کیا اور اسکو اپنی باہوں  میں لے لیا  اسکے بعد اسکے سب گھروالے رشتےداروں کے گھر شادی  میں چلے گے وہ گھر  میں اکیلی تھی  جب  میں اسکے گھر پوچھا تو وہ مجھ کو اندر لے گی

گھر  میں وہ اکیلی تھی  مجھے اندازہ نہیں تھا کہ وہ سیکس کی ہنگری ہو گی اور اتنی جلدی سے سیکس کرنے بارے سوچے گی یا تعاون کرنے لگے گی جو بھی تھا مٰں اب لکی تھا جس کو اتنی پیاری ایک اور دوست نے دوستی کی آفر کر دی تھی اور  اب گھر  میں ہم دونوں اکیلے تھے وہ  بہت شرما اورگھبرارہی تھی اور اسکو   میں نے پلنگ  پر  لٹایا اور  اسکے ہونٹوں   پر کس کی اور معو کو سہلاتا ہواپورے جسم  پر کسنگ  کرنا  شروع کردی

اور ساتھ ہی اسکے مموں کو دبانے لگا وہ بہت گھبرا رہی تھی  میں  نے اسکو سجایا اور وہ  چدائی کے لیئے تیار ہو رہی تھی وہ بھی گھبراکر سکس کا مزہ لے رہی تھی پھر  وہ مجھکو  بیڈ روم  میں  لے گی پھر بیڈ  پر لٹایا  لے اور اسکی قمیض کو اتارا اور پھر اسکی برا ہٹا مموں کو دبایا اور نوکوں کو زبان سے چاٹنا شروع کیا اسکی شکل بتا رہی تھی کہ اسکو بہت مزہ آ رہا تھا اسکو دیکھ کے مجھ کو بی مزہ آ رہا تھا

وہ ایک دم گرم سکسی آوازیں نکالنے لگی تھی  ا سنے شائد ننگی بلیو فلمیں دیکھ رکھی تھیں جو اس قدر شاندار سیکسی وازیں نکال کے چدائی کا ماحول بنائے جا رہی تھی اور وہ  پہلی  بار سکس کر رہی تھی  میں نے اسکی شلوار بھی اتار دی  تھی  اور اندھیرا کرکے اسکے  پورے  جسم  کو اوپر سے نیچے تک چومنے لگا    اس کا بدن مکھن کی طرح ملائم اور چکنا چکنا تھا اس کی گردن پہ جب کسنگ کی تو وہ جنونی ہی ہو گئی اور چوت کے کیا کہنے تھے

اسکے بعد  میں  نے اسکو اپنا   لنڈ نکالا  اور اسکے ہاتھ  میں  رکھ دیا  پھر اپنے کپڑے اتارے پھر اسکی چوت  میں  انگلی ڈالی تو وہ درد سے بار بار ٹانگوں کو ہلانا شروع کردیا پھر  میں  نے اسکی چوٹ  میں  اپنا  لنڈ  ڈالا اور اور مموں کو دبایا اور زور زور سے جھٹکے مارے وہ درد سے بہت رو رہی  تھی جب اس نے اپنی  چوٹ  سے خون نکلتا دیکھا   تو  وہ رونے لگی   میں نے اسکو سمجھایا تووہ مان گئ وہ بہت گھبرا گئ تھی  میں  نے اسکو اپنے  لنڈ کے اوپر بیٹھایا اور زور زور سے جھٹکے مارے وہ درد کے مارے چلا رہی تھی

ا سکو اندازہ نہیں تھا کہ پلے سیکس میں اس قدر درد والی چدائی لگتی ہے کئ لڑکیوں کو سن کے یقین نہیں آتا اور جب لن ان کی چوت کے اندر جاتا ہے تب ان کو یقین آتا ہے کہ کیا درد ہوتی ہے لیکن چدائی سے کبھی کوئی باز آیا ہے چاے کتنی درد کیوں نا ہوپھر اسکی چوت کو صاف کیا پھراسکو چودنا شروع کیا اسکے مممے جب جھٹکے سے ہلتے ہوہے بہت اچھے لگ رہے تھے پھر  میں نے اپنا  لنڈ  اسکی چوت  سے نکالا پھر اس نے میرے  لنڈ  سے موٹھ مارنے لگی کافی  دیر  تک وہ میرے لنڈ  کے ساتھ کھیلتی رہی

اور  میرے پورے جسم کو چاٹنے لگی  پھر  میں  نے اسکو لٹایا اور اسکے پورے جسم کو اوپر  سے نیچے تک چومنے  لگا  جب  میں  اسکے جسم کو چوم رہا تھا تو وہ بہت مست تھی اور میں اسکو چودتا ہوا اپنی جسم کی گرمی متا رہا تھا اسکی جونای نے مجھے پاگل کر دیا تھا اور میں ہر انداز میں اسکی چدائی مار کر اسکو مست دیا اور اپنی مٹھ کو بھی اسکی پھدی کر اندر ہی نکال کر فارغ ہوا آج وہ میری ایک بہت قریبی دوستی اور میری پرسنل گرل فرینڈ بھی ہے میں اکثر مٹھ نہ مارنے کے بجائے اسکو بلاتا ہوں یہ اسکے پاس جاتا ہوں اور پھر ہم دوبارہ سے دیسی لڑکی چدائی مارتے ہیں یہ تھی میری ہاٹ  سٹوری امید ہے آپکو ہاٹ کر گئی ہوگی

hot story share karnae k leyae app submit karo apni stoy

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top