سیکس سٹوریز ان اردو میں کنواری لڑکی ہمسائی چودی

(sex stories in urdu mae kanwari larki hamsai chodi)

sex stories in urdu mae kuch loog asani k sath kahani ko parh latae hae. es leyae mae laya hoo apni chudai kahani es font mae

سیکس  سٹوریز ان اردو  لوگوں کو پڑھنے کا شوق ہوتا ہےا ور وہ آسانی کے ساتھ اس کو پڑھ لیتے ہیں تو مٰں نے سوچا کہ اس سائیٹ میں یہ آپشن موجود ہے تو کیاں نا اپنی سیکسی گرم کہانی کو اس پہ پوسٹ کیا جائے

مجھے سیکس ہنگری کہہ سکتے ہیں جہاں بھی سیکسی  کمر اور گانڈ والی حسینہ کو دیکھ لیتا ہوں لٹو ہی ہو جاتا ہے میری ہمسائی آنٹی ہے .وہ خود بھی بہت سیکسی اور خوبصورت آنٹی ہے لیکن اس کی بیٹی تو اچھی خاصی چودنے لائق ہے اس کو دیکھ کے ہر بندہ اس کی پھدی لینے کا سوچنے لگتا ہے. اس  کی چدائی کہانی ہی تو میں  شیئر کرنا چاہتا ہوں

اور اب میں آپکو اپنا تعارف کراتا ہوں میرا نام اجیت ہے اور میں نے ایک بیس سالہ جوان حسینہ گرم لڑکی کے ساتھ سیکس کیا ہے وہ کیاکمال  کی لڑکی ہے جس کو چودنا میری پرانی خواہش تھی .جب سے وہ جوان ہوئی تھی محلے کے لڑکے سارا سارا دن اس کے گھر کے آس پاس لن ہاتھوں میں لیکر گھومتے تھے اور اس کی چوت نا ملتی تھی پر وہ رات کو ا سکے نام کی مٹھ لگا کے سوتے تھے تب ہی ان کو نیند ملتی تھی  اتنی سیکسی حالانکہ بظاہر عام لرکی تھی  لیکن لڑکوں کو مشکل میں ڈالا ہوا تھا

میں چدائی کا پرانا پاپی ہوں مجھے چودنا بھی آتا ہے اور پٹانا بھی آتا ہے .اس لیئے میں  اس کے  وہ لڑکی میری  پڑوسی آنٹی  کی بیٹی ہے جس کا بتا چکا ہوں کہ کود بھی ہاٹ کرنے والی آنٹی ہے اور اس کا نام کومل ہے  اور کومل  ہی لگتی ہے اس کو شوہر کے نام کے ساتھ کمار آتا تھا لیکن وہ فوت ہو چکے ہیں. ہم دونو ں خاندان بچپن سے ایک دوسرے کو جانتے تھےاور ہم دونوں کے گھر والوں کی بھی آپس میں دوستی بہت پرانی ہے ۔

وہ بہت خوبصورت لڑکیوں میں شامل تو نہیں نہ ہی وہ گوری ہے بس تھوڑی سانولی سی ہے اور عام سی شکل کی ملک ہے مگر اس کا جسم بہت ہی خوبصورت ہے ایک دن ہمارے گھر میں میری بری بہن کی شادی تھی. وہ لوگ بھی شادی میں شریک تھے اسدن شادی میں بہت خوبصورت لگ رہی تھی اسنے ساڑھی باندھ رکھی تھی. جس میں اس کا خوبصورت اور حسین جسم غضب کا لگ رہا تھا اتنی سیکسی لگ رہی تھی وہ اس دن میں نے پہلے کبھی بھی اس کو اتنا سیکسی نہیں دیکھا تھا۔

شادی میں بہت سارے مہمان آے ہوئے تھے مجھ کو استری کی ضرورت تھی اور گھر کی دونوں استریاں کواتین کے قبضے میں ٹھیں اور مٰں اسی آنٹی کے گھر گیا آنٹی تو ہمارے گھر میں  تھی. لیکن مجھے معلوم تھا کہ وہ حسینی اپنے گھر مٰں تیار ہو رہی ہو گی ہمارے گھر کی شادی میں شرکت کرنے ا سکی ماں پپہلے آ گئی تھی موقع اچھا تھا میں اس کے گھر پہنچ گیا ساتھ ہی جو تھا

میں اس کے گھر پہنچا تو وہ تیات ہو چکی تھی بس آنے ہی والی تھی گھر میں اس کے اور میرے علاوہ اور کوئی نہیں تھا میں نے اس کو کہا میرے ساتھ میرے کمرے میں چلو مجھ کو تم سے کچھ کام ہے وہ میرے ساتھ میرے کمرے میں تو بولی کہو کیا کام تھا ۔

میں نے اس کو بیٹھنے کو کہا وہ بیٹھ گئی میں نے کمرے کا دروازہ لاک کردیا تو وہ بولی اجیت تم نے دروازہ کیوں لاک کردیا  مجھے اندازہ ہوا کہ وہ اوپر سے گھبراہٹ دکھا رہی ہے اس کا من میرے ساتھ تنہائی  میں بیٹھنے کو ہے۔

میں نے کہا کے میں تم سے کچھ بات کرنا چاہتا ہوں وہ بولی کہو کیا بات تھی میں نے اس کا ہاتھ پکڑا اور اسکو کہا کے تم مجھ کو بہت اچھی لگتی ہو وہ بولی تم بھی مجھ کو بہت اچھے لگتے ہو میں نے کہا کے کیا میں تم کو کس کر سکتا ہوں وہ شرما گئی اور اپنا سر نیچے کر لیا ۔

میں نے اس کا چہرہ اپر کو اٹھایا اور اس کو کس کی ہونٹوں پر وہ کچھ بھی نہیں بولی میں اس کو اور زور زور سے کسنگ کر کرنے لگا وہ بولی بس کرو کوئی آجاے گا میں نے کہا کو بھی نہیں آے گا پھر اس کو کسنگ کرنے لگا وہ بھی گرم ہوگی اور مجھ کو کس کرتی رہی میں اسکی ساڑھی اتاری .اور اس کا بلاوز کھولا  کیا شاندار جوانی تھی اس کی

اور اس کے بریزر کو بھی کھولدیا پھر میں نے اپنے کپڑے اتارے اور اس کے ماموں کو چوسنے لگا اور وہ سس اہ اہ کر رہی تھی  ا سکی پھدی جیسے پانی چھوڑنے لگی تھی مجھے اس کو ننگا کرنے کا بہت کریز تھا .پھر میں نے اس کے سارے کپڑے اتار دے۔

اور اس کی چوت میں اپنے لنڈ کو ڈالنے لگا تو وہ بولی نہیں اندر نہیں ڈالو میں نے کہا کچھ بھی نہیں ہوگا بس تم کو تھوڑا سا درد ہوگا اور پھر تمکو مزہ آے گا وہ کچھ بھی نہ بولی اور میں نے اپنے لنڈ کو اسکی چوت پہ رکھ کر اندر ڈالنے لگا مگر نہیں جا رہا تھا میں نے اس کو کہا ھوصلہ کرنا میں تمہاری سیل  کھولنے والا ہوں

پھر میں نے اپنے لنڈ کو گرم لڑکی چوت پہ  رکھا اور زور سے جھٹکا دیا تو وہ چلانے لگی ۔

میں نے اپنے ہونٹوں کو اسکے ہونٹوں پہ رکھا اور اس کی چیخ دب گئی پھر میں اپنے لنڈ کو اندر باہر کرنے لگا اور اسکے ماموں کو بھی دباتا رہا تھوڑی دیر کے بعد میرے لنڈ نے اسکی چوت میں جھٹکے کھانے شروع کر دیے  اس کی پھدی فل گیلی ہو گئی اور چکنی ہونے پہ اس کو مست مزہ ملنے لگا .تھوڑی دیر اور کرتا رہا اور پھر وہ بھی فارغ ہو گئی پھر ہم اٹھے اور کپڑے پہن کر نیچے شادی میں پہنچ  گے۔

Sex stories in urdu umeed hae achi lagi ho gae agli baar or bhe nai lae kar aoo gaa

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top