اردو سیکس سٹوری بھائی کی شادی میں چودا

(urdu sex story bhai ke shadi mae choda)

urdu sex story me kase chudai lagai story read kare aur lund chod ke bada kiya

اردو سیکس سٹوری  میں اپنی دور کی راشتہ دار جوان خوار لڑکی کی پھدی لی اس کو بھی پھدی دینے کا شوق تھا مجھے بھی بلبلاتے لن کو کہیں چھپانا تھا پھر میں نے سوچا کئی دنوں سے مٹھ مار مار کے بے زار ہو گیا ہوں

اور اب کی بار ا سرشتہ دار جوان لڑکی کو پٹا کے اگر ا سکی پھدی تک رسائی مل جائے تو کیا ہی بات ہو گی بس یہ سوچ کے میں نےاس رات اس لڑکی کے آگے پیچھے تمام  پریکٹس کی تھی اور میں خامیاب ہو ہی گیا اس کی جوانی کی رسیلی پھدی کو چودنے  میں بڑے کسرتی چوتڑ چاٹنے پھدی چاٹنے اور ممے چوسنے

میں  مجھے چوتڑ پھدی چاٹنا اور ممے چوسنا برابر اس کام کے لڑکی کی بونڈ میں چھوٹی آئل والی انگلی دالکر بونڈ کھول؛نا بہت اچھا لگتا ہے ممے بھی چوسے جا رہے ہوں

پھدی کے دانے پہ زبان ہو اور ایک  انگلی بونڈ میں ہو لڑکی جناب ایک دم لش لش کر کے پھدی دینے پہ تیار ہو جاتی ہے کبھی کر کے دیکھیں وہ لن یوں مانگے گی جیسے صدیوں سے لن کو ترس رہی ہو   میں نے تو فور پلے جب بھی کیا ہے اسی طرح پھدی لینے سے پلے کرتا ہوں تب ایک دو منٹ چدائی میں  کافی ہوتے ہیں

اور لڑکی کی پھدی پانی چھوڑ دیتی ہے دو گھسے بڑے بڑے لگا دو اور کام ختم ہو جاتا ہے آج میں آپ کو اپنی ہی آپ بیتی کہانی  سناتا ہوں یہ میرے بڑھے بھائی کی شادی کی بات ہے

آج سے دوسال پہلے کی جب میں انیس بیس  سال کا تھا اور انٹر کا طلب علم تھا اور ایک جوان پاکستانی تھا میں کوچنگ بھی جاتا تھا میں نے بھائی کی شادی میں اپنے کلاس فیلوز کو بھی بلا  لیاتھا سب تو نہیں لیکن کچھ جو میرے کلوز فرینڈز تھے وہ آےتھے ان میں ہیرابھی تھی  ہیرا اس کا نک نیم تھا سب ا سطرح بلاتے تھے اصل نام حرا تھا لیکن سب لاڈ اور مذاق میں ا سکو ہیرا سے  تشبہ  دیکر ہیرا کہتے تھے وہ واقعی ہیرا ہی تھی کیا ممے اور پیٹ ایک دم ماڈل تھی وہ لڑکی

وہ دیکھنے میں بہت ہی پیاری اور  ہوٹ  تھی شادی میں جب آئ تھی تو اور بھی حسین لگ رہی تھی خیر جب میں نے اسے دیکھا تو تھوڑی دیر تک تو میں دیکھتا رہا

پھر مجھے کچھ ہونے لگا میں نے سوچا اسے کہوں کے تم بہت حسین لگ رہی ہو لیکن میں نے  خود روکا.اس دن مہندی تھی  اسےٹیبل  تک چھوڑ کے اپنے کاموں میں مصروف ہو گیا

دوسرےدن برات  تھی وہ برات  میں بھی آئ اس دن تو اور بھی خوبصورت لگ رہی تھی اس نے بلیک کلر  کا ڈریس پہنا تھا ان کپڑوں میں وہ قیامت لگ رہی تھی

میں نے آتے جاتے اس کی تعریفیں کرنا سٹارٹ کر دی پروگرام اینڈ ہو نے لگا تو میں نے اسے روکنے کا کہا پہلے تو وہ منع  کرتی رہی میں سمجھ گیا ا سنے چدائی کرانی ہے پر نخرے کرنے کے بعد پھدفی دے گی خیر مجھے چودنی تھی میں بھی تعریف کرتا رہا کیا فرق پڑتا ہے

پھر تھوڑی کوشش کے بعد وہ مان گئی اور کہنے لگی میں مما کو کال کر دوںمیں نے کہا ٹہک ہے میری فیملی تھوڑی بروڈمائنڈ ہے وہ ان باتوں  پر کوئی روک ٹوک نہیں کرتے

کہ کون آ رہا ہے کون نہیں .. خیر گھرمیں پھر تو شادی کا ماحول تھا وہ رک گی گیسٹ کے جانے کے بعد میں نے اسے میرے روم میں آرام کرنے کو کہا وہ تھوڑا گھبرائی

پھر جب میں نے اپنی مما سے کہلوایا تو وہ ماں گئی اور روم میں جا کر  کر ٹی وی دیکھنے لگی میں بھی کام اور گیسٹ  سے فری ہو کر روم میں گیا تو وہ کرسی پر بیٹھی سو رہی تھی میں نے آواز دی ہیرا اٹھو بیڈ پر لٹ جاؤ

وہ پھربھی سوتی رہی پتہ نہیں وہ کب سے سو رہی تھی اس کے بال بھی بکھر گے تھے مجھے یہ دیکھ کے اس پر اور بھی پیار آنے لگا میں نے آپنی فنگر سے اس کے منہ  پر سے بال ہٹائے

تو وہ چونک کے آٹھ گئی اور میرے گلے سے لگ گئی یہ دیکھ کے میں بھی تھوڑا حیران ہوا پھر ہیرا بولی اچھا ہوا آصف تم ہو میں تو ڈرہی گی تھی کہتے ہی وہ دور ہو گئی میں نے کہا ہممم  ڈرو مت میں ہی ہوں اور اس کہا آ پ آرام کرو میں باہر ہوں

وہ بولی تم کہی مت جاؤ نہ آج تم اچھے لگ رہے تھے میں نے کہا ہمممممممم میں یہی ہوں تم بھی بہت پیاری لگ رہی تھیں ا سکے ساتھ ہی ا سنے اب ذہن بنا لیا تھا کہ اب چدا ہی لوں بس ذہن بننے کی دیر ہوتی ہے

اسے گلے لگا لیا گلے لگا کر ہاتھ سے اس کی گردن سے بال ہٹا کے اس کی گردن پر کسسس کرنے لگا وہ میری بہو   میں سمٹنے لگی میں نے اسکے لیپ پرکیسس کی

اور اسے گودھ میں لے کے بیڈ پر گیا اور اس کے اور اپنے بھی کپڑے اتار کے گیٹ لاک کیا اور اس کے اوپر آ کے لیٹا لیپ کسسس کی اور اس کے بدن کو چومتا رہا

اس کے پورے بدن کو اتنا چوما کے وہ سیسکنے لگی کے میں اس کی چوت میں اپنا لنڈ ڈال دوں میں نے بھی تھوڑی دیر میں اس کی تانگے اٹھا کے اپنا لنڈ اس کی چوت میں ڈالا ہی تھا کے اس کی چیخیں  مجھے اور جوش دلا رہی تھیں

اس کے بوبس کو چوسنتے چوستے جھٹکے دینے لگا اور بھی مزہ آنے لگا وہ بھی سہی سے انجوئی کر رہی تھی  جھٹکے دیتے دیتے میں ڈسچارج ہونے والا ہی تھا

تو میں نے اس سے پوچھا کہ تم کتے ٹائم میں ہوگی تو بولی بس ہونے ہی والی ہوں میں نے جھٹکے دِیے تو ہم ساتھ ڈسچارج ہوے ہمیں اس روز بہت ہی مزہ آیا تھا آج بھی وہ اچھی دوست ہے لیکن ملنا کبھی کبھی ہوتا ہے مجھے تو بہت ہی مزہ آیا تھا اس کو چود کے کیا  شاندار لڑکی تھی اردو سیکس  سٹوری میں دوبارہ

urdu sex story kanvari ladki pahli bar chudai ti blood nikle ga pain hoo gi. kash bar bar kanvari ladki mile

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top