اردو سیکس سٹوریز چالو لڑکی کو اس کے گھر چودا

(urdu sex stories chalo ladki ko uske ghar choda)

urdu sex stories me bada lund kase chut me jata he

اردو کہانی کے ساتھ حاضر ہوں اس میں ایک اور سچی کہانی ہے اس کو ہمیں  ایک  دوست نے ای میل کیا ہے اس دوست کی حوصلہ افزائی کریں اور اپنی کہانیاں بھی ہم کو ای میل کرتے رہیں

تاکہ ہم ان کو بھی شامل اشاعت کریں  تو شروع کرتے ہیں اردو کہانی میرا نام اسامہ ہے میں کراچی میں رہتا ہوں میری کہانی ایک سچی گرم لڑکی کہانی ہے میری کہانی سن کر لڑکوں کو مٹھ ضرور مارنا پڑے گا اور لڑکیوں کو اپنی چوت میں انگلی کرے بغیر چین نہیں مل پائے گا

میں انجینئرنگ کا طالب علم ہوں اور میں کمرہ لے کر رہ رہا ہوں میرے ساتھ میرا دوست بھی رہتا ہے ہم دونوں ایک ساتھ پڑھتے ہیں ہم دونوں کی گرل فرینڈ بھی ہیں میری گرل فرینڈ کا نام شازیہ ہے

اور میرے دوست کی گرل فرینڈ کا نام ہنی ہےایک دن ہم ہنی کے گھر گئے تھے وہ اس کی مامی کی لڑکی نکلی وہ اپنی جوانی کی دہليز کو پار کر رہی تھی اس کی عمر تقریبا انیس  سال کی ہوگی اسکی جوانی کو دیکھ کر تو ہم دونوں کے ہوش اڑ گئے

اور ہم دونوں کا لنڈ کھڑا ہو گیا اسی دن جب ہم لوٹ رہے تھے تو ہم نے اسے چودنے کی منصوبہ بندی کی اور منصوبہ بندی کے مطابق جب اس کے گھر میں کوئی نہیں تھا

اس وقت ہم گئے اور گھنٹی وہ باہر نکلا ہے ہم نے کہا اندر بیٹھ  کے انتظار کر سکتے ہیں  ہم نے انجان بن کر پوچھا  خالد ہے کو کہ اس کا بھائی تھا ہم نے شو کیا

ہم اس کے بیسٹ فرینڈ ہیں اور اس کو ملنے بہت دور سے آئے ہیں ہےتو اس نے کہا  نہیں ہےہم نے کہا  اندر آ کر تھوڑا انتظار کر لیتے ہیں تو اس نے کہا  ٹھیک ہے چلو آؤ

جب ہم اندر گئے تو اس نے کہا  میں چائے لے کر آتی ہوں جب وہ چائے لینے جا رہی تھی تو اس کے چوتڑوں کی چال کو دیکھ کر میرے دوست کا لنڈ کھڑا ہو گیا

اور وہ صوفےپر پڑی اسکی برا کو لے کر اس کے کمرے  کے ساتھ بنے اٹیچ باتھ روم میں مٹھ مارنے چلا گیا  لیکن وہ واپس آگئی اور بولی اس طرح کرو تم بھیا کے کمرے میں چلو

میں ادگر چائے لیکر آتی ہوں  ہم وہاں چلے گئے جہاں پہلے سے بلیو فلم کی سی ڈی لگی ہوئی تھی  جو کہ اس نے جان بوجھ کے اس وقت لگائی تھی اور انجان بن کے ہم کو اس کمرے میں  لے گئی وہ تو چالو گرل تھی

تو وہ اس کو دیکھنے میں مست ہو گیا اور میں آگے جا کر بیٹھ گیا وہ آئی تو  میں نے فلم بند نا کی اور چونکنے کی اداکاری کی  وہ بولی تم شیطان ہو کیوں لگائی ہے

یہ مٰں بولا پہلے سے چل رہی تھی مجھ سے رہا نہیں گیا اور میں نے اس کا ایک بوسہ لے لیا تو وہ ہنس كر بولی  تم بہت شیطان ہو میں سمجھ گیا کہ راستہ صاف ہے تو میں نے کہا  یار تم تو بڑی سیکسی ہو آج سے پہلے کبھی چدوایا ہے تو اس نے کہا  نہیں کبھی تمہارے جیسا چودو ملا ہی نہیں

میں نے اس کی ایک چونچی کو کس کر پکڑ لیا اس کی سسکی نکل گئی میں نے کہا  آج تم کو تو چودکر رہونگااس نے کہا  کوئی آ جائے گا میں نے کہا  اس وقت کی تب دیکھیں گے

اور میں نے اسکی ٹی  شرٹ اتار دی اسکی چوچیوں کو دیکھ کر میرا لنڈ کھڑا ہو گیااس نےکہا  میں تمہارے لنڈ کے درشن کرنا چاہتی ہوںمیں نے اپنے کپڑے اتار دئے

میرے لنڈ کو دیکھ کر وہ بولی  میری چوت میں پسینہ آ رہا ہے اب مجھے چودو تو میں نے کہا  اتنی بھی کیا جلدی ہے ابھی تو صرف پسینہ ہی نکلا ہے بعد میں تو رسملائی بھی نکلے گی جس کو کھائے بغیر میں تم کو نہیں چودوں گااتنا کہہ کر میں اسکی دونوں چوچیوں کو پکڑ کر کس کے مسلنے لگا

تب اس کے منہ سے سسکیاں نکلنے لگی  آ

ہآہاہا اوچ پلیز بس کرو میں مر جاؤں گی پھر میں اس کی شلوار کے اوپر سے ہی اسکی چوت کو سہلانے لگا پھر وہ اپنے آپ ہی اپنی شلوار اتارنے لگی میں اس کی چوت کو دیکھ کر بولا

 کیا مست چوت اس نے کہا  پلیز جلدی کرو مجھ سے رہا نہیں جا رہا ہےمیں نے کہا  پہلے میرے لنڈ کو منہ میں لے کر اسے چوسو اس نے میرا لنڈ اپنے منہ میں لیا تو کہا  یہ تو بہت گرم ہےاور وہ اندر  باہر کرنے لگی میں نے کہا  یہ اب تیار ہے پھر میں نے اس کی ٹانگوں کو اٹھا کر اسکی چوت پر ڈھیر سارا تھوک ڈالا

اور اپنا لنڈ اسکی چوت پر رکھ کر زور سے جھٹکا مارا تواس کے منہ سے زور سے آواز نکلی  مرگئی اواوااواواہاہابس کرومیں نے کہا  ابھی تو بس آدھا ہی گیا ہےاس نے کہا

 رہنے دو میری چوت پھٹی جا رہی ہے اور بہت درد ہو رہا ہےلیکن میں نے اس کی ٹانگوں کو کس کے پکڑ کر ایک زور کاجھٹکا مارا اور پورا کا لنڈ اسکی چوت میں گھسیڑ دیا

اس نے کہا  ارے تم تو بہت بےدردی ہو میں نے کہا  جان اسی درد کے بعد ہی تو چودائی کا مزہ آئے گااس نے اپنا سر اٹھا کر نیچے دیکھا تو پوری چادر خون سے لت پت تھی

وہ ڈرکر بولی  یہ کیا ہےمیں نے کہا  یہ تو مزہ آنے کی گرم لڑکی نشانی ہےاور پھر میں نے اسکی چوچیوں کو چوسنا شروع کر دیا جس سے وہ اپنے درد کو بھول کر مزہ لے کر مستی کے ساتھ

آآآہآہاہا کرنے لگی اؤر بولی  میری اس چوت کو چودو یہ تو چدوانے کے لئے فیل چکی ہےپھر میں نے زور  زور سے جھٹکے مارنا شروع کر دیے اسے بھی مزا آنے لگا اور مجھے بھی مزہ آنے لگا تھوڑی دیر بعد وہ مجھ سے کس کر چپک گئی اور چھوٹ گئی

پھر میں بھی دو چار جھٹکے مارنے کے بعد چھوٹنے لگا میرا گرم پانی اس کی چوت میں داخل ہونے لگااس نے کہا  بڑا اچھا لگاپھر میں نے اسی دن بہت سارے اینگلوں سے اسے چودا

پھر ہمیں جب بھی موقع ملتا ہے تو ہم چدائی کرتے ہیں اور میں نے اپنی مٹھ بہت بار اسکے گرم لڑکی کے منہ پر بھی گرائیاس کو ماڈرن چدائی کا کریز ہے اب ا سکی چوت کھل  چکی ہے وہ خود بھی اس سائیٹ پہ اردو کہانی پڑھتی ہے اور خوش ہوتی ہے

urdu sex stories teen age ka sex bahut shandar hota he

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top