سیکس سٹوری ایک نوجوان کی جس سے ہاتھ ہو گیا

(sex story aek nijwan ki jis sae haath ho geya)

Sex Story ek chudai k dewanae ki mazedar

میں آپ  کو آج ایک سچی کہانی سناتا ہوں  میں ایک ہوٹل  میں کھانا  کہنے  گیا  اور کچھ دیر وہا  ہی تھا  انتظار کر  رہتا تھا  ایک گرم لڑکی  اپنی فیملی  کے ساتھ آئی  ہوٹل میں آئی . میں اس کو دیکھتے  پاگل ہو گیا تھا میں اسے دکھتا ہی رہا کے ایک دم  اسنے بھی میری  طرف دیکھا

جیسے اسکو بھی میرا انتظار تھا بس اتنے میں مجھے اشارہ  کیا .اور اپنے گھر کا پتا ایک پیپر پہ لکھا کے دیا میں وہا ں سے کھانا کھا کے نکلا تو رات بھر سو نہیں سکا تھا

مٹھ ماری رات کو اگلے دن میں نے فون پہ جانے کا پروگرام بنایااور اس نے مجھے آنے کا بول دیا

میں لن کے بال اتار کے  ا سکے چلا گیا تھا میں اسکا انتظار کر رہا وہ تھوڑی دیر  بالکنی میں  اشارہ کیا تھیاور مجھے پھر اندر لے گئی او ر بولیا تنے پیار سے کیوں دیکھتے ہو

تمھارے جسم کو دیکھ  تو میں اپنے آپ کے  میں نہ رہا  تھا کہ وہ مجھے وہا ں ہی کوئی  جگہ مل جاے تو کیا بات  ہے لیکن تم نے تو میرا کام ہی آسان  کر دیا

مجھے اپنے گھر میں بلا کے پھر اسنے مجھے پیار کرنا شروع کر دیا اس سے پہلے کے میں اسے کچھ  کرتا لیکن  وہ مجھے کس کرنے لگی. مجھے تو اس لڑکی نے پاگل  کر  دیا

بس پھر میں نے اسے کس کی میں نے اسکی قمیض اتاردی اسکے بڑے ممے  چوسنے  لگا  اسکے  پورے جسم  پہ  پیار  کیا  وہ بھی پاگل تھے اس ٹائم  اور میں بھی پھر میں نے اس کی چوت   پہ ہاتھ  پھیر نے  لگا تھا

پھر میں ہمممممممم احھھ ھھھہ  .اسکے چوت میں اپنا لنڈ ڈالا  اور زور زوز سے اندر باھر  کرنے  لگا  تھا   میں اندر بھر کرتا رہا اور سات سات اسکے پورے  جسم پے ہاتھ  مارتا  رہا

وہ  امممم  اح ھھھہ  کرتی  رہی  پھر میں نے اپنا مست بڑا لنڈ  باہرنکالا. اور اس نے اپنا بوبز کے بچ میں لن  کو دبا کے مسلنے لگی سلانے لگی

اور اپنے چوت میں انگلی کرنی لگ گئی اس کی چوت سی پانی نکل نے لگ گیا وہ انگلی کرتی رہی گرم ہوتی رہی  رہی افففف احھہ احھھہ حم   وہ اسے  چومنے  لگی . کچھ دیر  بعد میں نے  اسے  پھر اسکی چوت میں ڈال  دیا  کچھ  دیر بعد میں اور وہ لڑکی کی  اور میری منی  نکل  گئی

تو پھر  میں  کچھ دیر لیٹا رہااور پھر  ا سسے گانڈ مانگی اس نے نا دی اپنے گھر  جلا گیا  تھا اس لڑکی کی گانڈ چودنے کے لالچ مٰں بہت پیسے اس کو کھلایئ اور اس نے گانڈ نا دی

اور ایک دن مجھے علم ہوا وہ فیملی کے ساتھ کراچی چلی گئی ہے اور اس کا فون بھی بند  مجھے. علم ہو گیا اس نے مال کھنا تھا کھا لیا اب کیا ہو سکتا تھا
میں تنگ آ چکا تھا. اور پھر پیسے بھی ختم ہو گئے

تو میں نے ایک آفس میں جاب کر لی. تاکہ پیسے ہونگے تو لڑکی چود سکوں گا میں آفس جاب کرتا  ہوں کرتا ہوں میرے سات ایک خوار گرم لڑکی بھی کام کرتی ہے میں اسکا دیوانہ ہوں  وہ  مجھے بہت گرم لگتی ہے

اسے دیکھتے ہی میرا دل کہتا ہے کی اسے اپنا بنا لو اور  اس سے بات کرنا کی کوسش کی میں نے اسے اک بار بات بھی کی تھی مگر اسنے منع کر دیا. ہار نہ مانی ور میں اس کی پیچھا لگا رہا وہ جب بھی آفس آتی میں اس کو دیکھتارہتا ایک دن وہ کالی قمیض پہن کی آئی . تو اس میں اس کا فگر صاف صاف دیکھ  رہا تھا

میں اس کو دیکھ کے پاگل ہو گیا تھا مجھ سے رہا نہیں گیا میں نے تب تک اسکو اپنے ساتھ رہنے کے لیئے منا لیا تھا اور پھر آخر کار بڑی کوششیں کرنے کے بعد وہ میرے ساتھ چلنے کو تیار ہوئی اور ہم دفتر سے چھٹی لے کر میں دوست کی طرف جانے لگا  میں اسے اپنے دوست کے گھر لے کے چلا گیا  وہاں کوئی بھی نہیں تھا

میں نے کسسس  کرنا شروع کر دیا میں اس کو کیسس کرتا ہوا اس کی جسم پہ ہاتھ پھیر رہا تھا وہ بہت گرم ہو گئی تھی  وہ بھی اپنا ہوش کھو گئی تھی ہم دونو ایک دوسرا میں پاگل ہو گئے تھے

میں نے اس کی قمیض اتار دی اس کے جسمدیکھنے والا تھا ایک دم لش  اب میں اس کی  بڑے دودھ دبا رہا تھا

ور اس کو اپنی بانہوں  میں اسکا جسم کا کوئی بھی حصہ  ایسا نہ رہا  کے جس  پے میں  نے اپنا ہاتھ نہ مارا  ہو اور اپنے ہاتھ کے سات سات اسکے پورے جسم  پہ کسسسس  بھی کرتا رہا

یہاں تک کے ہم دونو ں اپنے  آپ  میں  نہ رہے میں نے اسے  اپنی گودلے لیا

اس کے دودھ  چوسنے لگ گیا میں اپنے ہاتھ  سے اس کے جسم  سہلانے  لگ گیا  پھر اس کو اپنا لنڈ  پکڑ  کے سہلانے  لگی اور اسکو  اپنا اوپر  لے کے اسکی چوت پہ ہاتھ لگا

وہ اور بھی گرم  ہو گئی میں نے اسکی چوت پے اپنا لنڈ لگا کے سلانے  لگا وہ پاگل ہو گئی

اور وہ بولنے  لگی  مارے اندر ڈال دو اب میں اس کی چوت میں  اپنا لنڈ ڈالا تو وہ درد سے آواز نکلنے  لگی  تھی اف اُوفففف ا اس کے اندر باہر کرنا شروع  کرنے  میں اور زورلگا رہا تھا اسکی چوت میں  سہلاتا رہا

اور اندر بھر کرتا رہا پھر اسنے میرا لنڈ اپنے منہ میں  لے کے  چوسنا  شروع  کر دیا وہ بھوت دیر  تک  چوستی   رہی تھوڑی  دیر  میری منی  نکل  گئی  مجھےسکون مل گیا

پھر ہم لوگ اسی طرح بہت بار ملنے لگے اور وہ مجھے سے جو خفا رہتی تھی وہ سب ختم ہو گیا اب وہ میری ایک پرسنل لڑکی تھی اور ہم اکثر کئی بار ایک دوسرے کی چدائی لگاتے

اور پھر اپنی جوانی کی ٹھرک مٹا کر مست مزہ لیتے اسکے ممے اور اسکی چوت کو ہر بار چوستا اور  اب یہ لڑکی بنا  پیسوں کے بھی چدا لیتی ہے

Sex Story jab gand k lalich mae pasae lutata raha

What did you think of this story??

Comments

Scroll To Top